1. دار الافتاء الاخلاص کراچی
  2. دیگر متفرقات

بدکار بیوی کو زہر کھلا کر مارنے کا حکم

سوال

اگر کسی شخص کی بیوی بدکاری میں مبتلا ہو، اور شوہر کے بارہا سمجھانے اور سزا دینے سے بھی باز نہ آئے، اور جبکہ سنگساری کی سزا بھی حکومت وقت کی طرف سے جاری نہ کی جاتی ہو، تو کیا وہ شوہر اپنی بیوی کو اگر زہر کھلا کر مار ڈالنا چاہے، تو اس سے وہ گناہ گار تو نہیں ہوگا؟

جواب

شوہر کے لئے بدکار بیوی کو زہر کھلا کر مار ڈالنا جائز نہیں ہے، اس لیے کہ اسلام میں بدکار شادی شدہ کی حد رجم (سنگساری) مقرر کی گئی ہے، اور حاکم وقت یا اس کا نائب اس حد کو جاری کرسکتا ہے، شوہر کو حد جاری کرنے کا حق حاصل نہیں ہے، لہذا اگر کسی شخص کی بیوی بدکاری میں مبتلا ہو، اور وہ بیوی کے ساتھ رہنا نہ چاہے، تو اسے چاہیے کہ اسے طلاق دے کر اپنے سے جدا کردے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الھندیۃ:

وركنه: إقامة الإمام أو نائبه في الإقامة.

(ج: 2، ص: 143، ط: دار الفکر)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی


ماخذ :دار الافتاء الاخلاص کراچی
فتوی نمبر :6203


فتوی پرنٹ