1. دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
  2. کتاب الحج

ساس کا داماد کے ساتھ حج پر جانا

سوال

اگر کسی عورت کا بیٹا نہ ہو صرف بیٹیاں ہوں تو کیا وہ اپنی بیٹی اور داماد کے ساتھ حج و عمرہ پر جا سکتی ہے؟ کیا ساس داماد کے لیے محرم ہے یا نہیں؟

جواب

ساس کے لیے داماد شرعاً محرم ہے، لہٰذا وہ اپنی بیٹی اور داماد کے ساتھ حج و عمرہ کے لیے جا سکتی ہے۔

(۱) وامھات نساء کم ....... الخ۔ (سورۃ النسائ)

(۲) اسباب التحریم انواع قرابۃ مصاھرۃ ....... الخ

(الدرالمختار مع ردالمحتار ۳/۳۸)"


ماخذ :دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
فتوی نمبر :272


فتوی پرنٹ