1. دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
  2. باب مفسدات الصلوٰۃ والمکروھات

لفظ کی غلط ادائیگی کے بعد فوراً درست کرلینے کی صورت میں نماز کا حکم

سوال

اگر نماز کے دوران کوئی لفظ غلط ادا ہو جائے تو اگر اسی وقت اس کو دوبارہ صحیح کرکے ادا کرلے تو کیا نماز درست ہو جائیگی یا سجدہ سھو بھی کرنا ہوگا۔؟

جواب

نماز میں کسی لفظ کی غلط ادائیگی کے بعد لوٹ کر اگر اسے درست پڑھ لیا تو نماز صحیح ہو جائے گی اور ایسی غلطی پر سجدہ سہو نہیں کیا جاتا۔

ذکر فی الفوائد لوقرأ فی الصلٰوۃ بخطاء فاحش ثم رجع وقرأ صحیحاً قال عندی صلٰوتہ جائزۃً۔ الخ ۔ (ہندیہ ص ۸۲، ج ۱)


ماخذ :دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
فتوی نمبر :610


PDF ڈاؤن لوڈ