1. دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
  2. باب مفسدات الصلوٰۃ والمکروھات

ہیٹر کے سامنے نماز پڑھنے کا حکم

سوال

کیا ہیٹر کے سامنے نماز پڑھنے سے کوئی فرق پڑتا ہے۔

جواب

ہیٹر کو حرارت حاصل کرنے کے لئے رکھا جاتا ہے اس کی عبادت مقصود نہیں ہوتی اس لئے ہیٹر سامنے رکھا ہونے کی صورت میں نماز ادا کرنا جائز ہے اس سے نماز میں کوئی فرق نہیں پڑتا تاہم اگر اسکو ایک طرف اسطرح رکھ دیا جائے کہ اس کی جانب سجدہ کی صورت بھی نہ ہو تویہ احوط ہے۔(مأخذہ کفایۃ المفتی جلد : ۳ ص ۲۱۰)


ماخذ :دار الافتاء جامعہ اشرفیہ لاہور
فتوی نمبر :613


PDF ڈاؤن لوڈ