1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن

لڑکی کا نام ہریرہ رکھنا

سوال

 لڑکی کا نام ہریرہ ركھنا کیسا ہے؟

جواب

"ہریرہ"  "ہرۃ"  کی تصغیر ہے اور ہرۃ بلی کے معنی میں ہے لہذا لڑکی کا نام ہریرہ رکھنا درست نہیں ہے۔

لہذا مذکورہ نام کے بجائے صحابیات کے ناموں میں کسی نام کا انتخاب کرکے رکھنا زیادہ بہتر ہے، ہماری ویب سائٹ اور ایپلی کیشن میں "اسلامی ناموں" کےعنوان سے ایک آپشن موجود ہے، وہاں  سے بھی  آپ نام کا انتخاب کرسکتے ہیں۔

البتہ لڑکے کا نام ابو ہریرہ رکھنا درست ہے صحابی رسول اللہ علیہ وسلم کی مناسبت ہے۔

المنجد میں ہے:

"ھرة ، ج:  هِرَر (ح): السنور."

(ھر، ص: 861 ط: موسسۃ انتشارات دار العلم)

فقط واللہ اعلم 


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144311101353
تاریخ اجراء :18-06-2022

فتوی پرنٹ