1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن

خالہ کی بیٹیوں کا حکم

سوال

 زید کی خالہ نے اپنی نانی کا دودھ  پیا ہوا ہے تو اس طرح وہ زید کی والدہ کی رضاعی  خالہ بھی ہو گئیں، تو کیا ان خالہ کی بیٹیاں زید کی رضاعی خالہ ہوں گی اور محرم ہوں گی یا غیر محرم ہی رہےگی۔

جواب

صورت ِمسئولہ میں خالہ کی بیٹیاں  زید کے لیے غیر محرم ہے  ،ان سےشرعاً پردہ  لازم ہے ۔

فتاوی شامی میں ہے :

"‌والمحرم ‌من ‌لا ‌يجوز ‌له ‌مناكحتها على التأبيد بقرابة أو رضاع أو صهرية كما في التحفة."

(کتاب الحج،ج:۲،ص:۴۶۴،سعید)

فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144309100965
تاریخ اجراء :19-04-2022

فتوی پرنٹ