1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. ایمان وعقائد
  3. بدعات اور رسوم
  4. رسومات

دعا میں ان اللہ وملائکتہ یصلون علی النبی پڑھنا

سوال

کچھ ائمہ دعا ختم کرنے سے پہلے

جواب

واضح رہے کہ دعا کے آداب میں سے ہے کہ اول و آخر درود شریف کا اہتمام کیا جائے، البتہ درود شریف پڑھنے سے پہلے ﴿ اِنَّ اللّٰهَ وَ مَلَائِكَتَه يُصَلُّوْنَ عَلَی النَّبِيِّ﴾  پڑھنے کو  لازم سمجھنا بے اصل ہے ، اور مذکورہ آیت  درود شریف پڑھنے سے پہلے نہ پڑھنے والوں پر نکیر کرنا یا ان کو درود شریف نہ پڑھنے والا سمجھنا غلط عمل ہے، پس اگر کوئی شخص مذکورہ آیت  درود شریف سے پہلے پڑھنے کو لازم نہ سمجھتا ہو، بلکہ سامعین کو بھی درود شریف  پڑھنے کی ترغیب دینے کی غرض سے پڑھ لیتا ہو تو اس کی اجازت ہوگی، لیکن کچھ لوگوں کا معمول یہ ہے کہ وہ بہرصورت بآوازِ بلند مذکورہ آیت پڑھتے ہیں، گویا عملاً وہ اسے لازم  اور دعا کا حصہ سمجھتے ہیں؛ اس لیے التزام مالایلزم (جو چیز لازم نہ ہو، اسے لازم سمجھنے) کی وجہ سے اس سے اجتناب لازم ہے۔ فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144001200365
تاریخ اجراء :02-10-2018

فتوی پرنٹ