1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. حقوق و معاشرت
  3. باہمی حقوق
  4. میاں ، بیوی کے حقوق

بیوی اور بچہ کے بیمار ہونے کی صورت میں تبلیغی جماعت میں جانے کا حکم

سوال

میرےبڑےبہنوئی جوکہ جما عت میں سات مہینے کے لیے جانا چاہتے ہیں حال آں کہ ان کابچہ بھی بیمار ہے اور گھر بھی زیرِ تعمیر ہے، میری بہن بھی بہت بیمار رہتی ہے، اُن کے اُوپر بھوت سوار ہے جس کی وجہ سے دونوں میں بہت شدید لڑائی بھی ہوتی رہتی ہے، آپ حضرات قرآن وحدیث کی روشنی میں جواب عنایت فرمائیں!

جواب

تبلیغی جماعت میں جانا بہت اچھی بات اور نیکی کا کام ہے، لیکن بیوی ، بچوں اور دیگر اہلِ حقوق کے حقوق کی ادائیگی انتہائی ضروری ہے، تبلیغی جماعت کے بزرگوں اور اکابرین کی ہدایات بھی یہی ہیں کہ تبلیغی سفر میں جانے سے پہلے اپنے گھر والوں کے تمام حقوق کا انتظام کر کے اور گھر والوں کو راضی کر کے ہی آدمی کو تبلیغی سفر میں جانا چاہیے، لہٰذا آپ کے بہنوئی کو چاہیے کہ اپنے حالات تبلیغی جماعت کے اکابر علماء و مشائخ کے علم میں لاکر، اہلِ حقوق کے حقوق کی ادائیگی کی ترتیب بناکر اکابر کے مشورہ سے ہی کوئی قدم اٹھائیں۔ فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144004201529
تاریخ اجراء :04-03-2019

فتوی پرنٹ