1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. حقوق و معاشرت
  3. باہمی حقوق
  4. اولاد کے حقوق

لڑکی کا نام "حسینین" رکھنا

سوال

میری بیٹی کا نام "حسینین"  ہے،  کیا یہ درست نام ہے؟ اور اس کا معنٰی کیا ہے؟

جواب

لغتِ عربی میں حسن ، حسین اور حسنین کے  اسماء ملتے ہیں،  البتہ ’’حسینین‘‘   کا عرف میں استعمال نہیں ہے، ’’حسینین‘‘ حسین کا تثنیہ ہے، جس کے معنی دو حسین کے ہیں۔ ’’حسنین‘‘ یا’’حسینین‘‘ مذکر کے صیغے ہیں؛ لہٰذا یہ لڑکی کا نام نہیں رکھنا چاہیے۔ بہتر یہ ہے کہ آپ اپنی صاحب زادی کا نام صحابیات کے ناموں میں سے کوئی  رکھ لیں، نیز ہماری ویب سائٹ پر اسلامی نام کے حصہ میں اچھے معانی کے اسماء میں سے کوئی اسم منتخب کر لیں۔ فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144008201649
تاریخ اجراء :28-05-2019

فتوی پرنٹ