1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. حقوق و معاشرت
  3. باہمی حقوق
  4. اولاد کے حقوق

نواس نام رکھنا کیسا ہے؟

سوال

’’نواس‘‘  نام رکھنا کیسا ہے؟

جواب

’’نَوَّاس‘‘  ایک صحابی کا نام ہے،  اور صحابہ کے نام پر نام رکھنا باعثِ برکت ہے؛  اس لیے یہ نام رکھا جا سکتا ہے۔

تبصير المنتبه بتحرير المشتبه (4/ 1427):
"نُواس : واضح.
وبالفتح وتشديد الواو : نَوّاس بن سمعان الكلابي ، صحابي شهير".
الجرح والتعديل لعبدالرحمن الرازي (8/ 507):
" نواس بن سمعان الكلابي شامي له صحبة".
فقط واللہ اعلم 


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144008201810
تاریخ اجراء :01-06-2019

فتوی پرنٹ