1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. حقوق و معاشرت
  3. نکاح / طلاق
  4. طلاق - وقوع اور عدم وقوع

شوہر کے مذکورہ جملہ ’’ اگر تم نے میرے ماں باپ کو گالی دی تو تمہیں طلاق‘‘ کہنے کے بعد بیوی کا ساس کو ’’رنڈی‘‘ کہنے سے طلاق کا حکم

سوال

ایک شخص نے اپنی بیوی سے کہا:  اگر تم نے میرے ماں باپ کو گالی دی تو تمہیں طلاق۔  کچھ عرصے کے بعد اس کی بیوی نے  اس کی ماں کو ’’رنڈی‘‘  بول دیا ۔ کیا مذکورہ شخص کی بیوی کو طلاق واقع ہوگی؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں مذکورہ شخص کی بیوی پر ایک طلاقِ رجعی واقع ہوگئی ہے، عدت کے اندر  رجوع کرنے کا اختیار ہے، عدت کے اندر رجوع کرنے کی صورت میں نکاح باقی رہے گا، لیکن اگر اس نے عدت کے اندر رجوع نہیں کیا تو عدت گزرنے پر نکاح ختم ہوجائے گا۔ اور بعد از عدت باہمی رضامندی سے نئے مہر کے ساتھ نکاحِ جدید کی اجازت ہوگی، بہر دو صورت شوہر کو آئندہ دو طلاقوں کا اختیار حاصل ہوگا۔ فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144010200014
تاریخ اجراء :11-06-2019

فتوی پرنٹ