1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. معاملات
  3. وراثت / وصیت
  4. ورثاء اور ان کے حصص

ایک بیٹا اور چار بیٹیوں میں میراث کی تقسیم

سوال

اگر میری والدہ کی وراثت ہے، ہم  4 بیٹیاں اور ایک بیٹا ہے، والد کا انتقال ہو چکا ہو تو وراثت کیسے تقسیم ہو گی؟

جواب

صورتِ مسئولہ میں مرحومہ کے  حقوقِ متقدمہ   کی ادائیگی کے بعد اس  کی کل جائیداد منقولہ و غیر منقولہ  کو    6 حصوں میں تقسیم کرکے دو حصے مرحومہ کے بیٹے کو اور ایک ایک حصہ مرحومہ کی ہر ایک بیٹی کو ملے گا۔

یعنی   100 روپے میں سے 33.33 روپے مرحومہ کے بیٹے کو اور 16.66 روپے اس کی ہر ایک بیٹی کو ملیں گے۔فقط و اللہ اعلم

 


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144203200719
تاریخ اجراء :30-10-2020

فتوی پرنٹ