1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
  2. معاملات
  3. ملازمت
  4. جائز اور ناجائز ملازمت

اسٹیٹ لائف انشورنس میں ملازمت کرنے کا حکم

سوال

کیا اسٹیٹ لائف میں کام کرنا جائز ہے؟

جواب

واضح رہے کہ انشورنس کی تمام کمپنیاں جوئے اور سود پر مشتمل ہونے کی وجہ سے ناجائز اور حرام ہیں، لہذا اسٹیٹ لائف انشورنس کمپنی میں ملازمت کرنا جائز نہیں ہے اور نہ ہی اس کی تنخواہ حلال ہے۔

احکام القرآن میں ہے:

"ولا خلاف بین أهل العلم في تحریم القمار".

(أحکام القرآن للجصاص، ج:1، ص:450، ط:قدیمي کتب خانه)

تفسیر ابن کثیر میں ہے:

"{ولا تعاونوا على الاثم و العدوان}، یأمر تعالی عبادہ المؤمنین بالمعاونة علی فعل الخیرات وهوالبر و ترك المنکرات و هو التقوی، و ینهاهم عن التناصر علی الباطل و التعاون علی المآثم والمحارم".

(تفسیر ابن کثیر، ج:2، ص:10، ط:دارالسلام)

فتاوی شامی میں ہے:

"ویکره تحریمًا بیع السلاح من أهل الفتنة أن علم؛ لأنّه إعانة علی المعصیة".

(رد المحتار علی الدر المختار، ج:4، ص:268، ط:ایچ ایم سعید)

فتاوی شامی میں ہے:

"کل ما یؤدي إلی ما لایجوز لایجوز".

(ردالمحتار علی الدرالمختار، ج:6، ص:360، ط:ایچ ایم سعید)

فقط والله أعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144111200532
تاریخ اجراء :01-07-2020

فتوی پرنٹ