1. دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن

قضا نماز کے لیے اذان اور اقامت کہنا

سوال

 اگر ایک مقیم شخص کی نماز فوت ہو جائے  تو جب وہ اس کو ادا کرے تو کیااس کے  لیے اذان اور اقامت ضروری ہے ؟

جواب

قضا  نماز کی ادائیگی کے وقت  بھی اذان و اقامت  کہنا مسنون ہے ،  چاہے باجماعت پڑھی جائے یا اکیلے پڑھی جائے،اگر کسی نے بغیر اذان و اقامت کے قضا نماز پڑھ لی تو  بھی نماز ہوجائے گی ۔

وفي الفتاوى الهندية :

"ومن فاتته صلاة في وقتها فقضاها أذن لها وأقام واحدًا كان أو جماعةً، هكذا في المحيط.(1 / 55ط:دارالفکر)

فقط واللہ اعلم


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ العلوم الاسلامیۃ بنوری ٹاؤن
فتوی نمبر :144210200410
تاریخ اجراء :24-05-2021

فتوی پرنٹ