1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. بیع و تجارت

دو ملکوں کی کرنسی کی جنس مختلف ہونے کی بنیاد

سوال

دو ملکوں کی کرنسی کی جنس مختلف ہونے کی بنیاد

جواب

Fatwa: 470-177/TD-Mulhaqa=7/1443

 دو ملکوں کی کرنسی کی جنس مختلف ہوتی ہے؛ اس لیے کہ ہر ملک کی کرنسی کی قوت خرید مختلف ہوتی ہے ،نوٹ مقصود نہیںہوتے ہیں؛ بلکہ یہ مخصوص قوت خرید کی نمائندگی کرتے ہیں، لہذا ہر ملک کی کرنسی الگ جنس شمار ہوگی ۔( تفصیل کے لیے دیکھیے:اسلام اور جدید معیشت و تجارت ، ص: ۱۰۷)

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :609745
تاریخ اجراء :24-Feb-2022

فتوی پرنٹ