1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. سود و انشورنس

کرنسی اور گولڈ کے دوسرے ملک سے کاروبار کرنا کیسا ہے؟

سوال

کرنسی اور گولڈ کے دوسرے ملک سے کاروبار کرنا کیسا ہے؟

جواب

Fatwa : 735-590/M=07/1443

 دوسرے ملک سے جائز اشیاء خرید کر یا منگواکر اپنے ملک میں اسے جائز طریقے پر بیچنا اور اس پر نفع کمانا، شرعاً ناجائز نہیں ہے لیکن قانونی اعتبار سے جن چیزوں پر بابندی ہو یا جو طریقہ خلاف قانون ہو، اُن چیزوں کا کاروبار کرکے یا خلاف قانون طریقہ اختیار کرکے خود کو ہلاکت میں ڈالنا صحیح نہیں۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :609537
تاریخ اجراء :09-Feb-2022

فتوی پرنٹ