1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. سود و انشورنس

'فون پے ایپ 'سے ملنے والی رقم كا حكم

سوال

کیا فرماتے ہیں علمائدین و مفتیان کرام 'فون پے ایپ' کے بارے میں کہ جس سے منی ٹرانسفرکرنے پر ملنے والی رقم کے بارے میں پھر اس میں دو پہلو ہیں واقعی ضرورت کی بناء پر ٹرانسفر کرنا یا ریچارج کرنا وغیرہ بغیر ضرورت کے ایک دوسرے کے کھاتے میں منی ٹرانسفرکرنا تاکہ دونوں کوکچھ نہ کچھ رقم ملتی رہے دونوں کے احکام واضح فرمائیں۔

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa : 630-517/D=07/1440
فون پے میں رقم ٹرانسفر کرنے اور ریچارج کرنے کی صورت میں جو رقم ملتی ہے وہ ایک طرح کا ترغیبی انعام ہے اس لئے یہ رقم آپ کے لئے حلال ہے خواہ ضرورت کی بنا پر ٹرانسفر کی صورت میں ملے یا بغیر ضرورت کے ٹرانسفر کرنے پر۔ لیکن بلاضرورت اس طرح کے ایپوں میں اشتغال اچھا نہیں۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :169245
تاریخ اجراء :Mar 11, 2019

PDF ڈاؤن لوڈ