1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. وراثت ووصیت

رضاعی اولاد وارث نہیں ہوتی ہے

سوال

کیا رضائی اولاد وراثت میں شامل ہے ؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa:728-601/N=8/1440
 رضاعت، اسباب وراثت میں سے نہیں ہے؛ اس لیے رضاعی اولاد سے اگر نسبی تعلق نہ ہو تو محض رضاعت کی بنیا د پر وہ وارث نہیں ہوگی۔
ویستحق الإرث …بأحد ثلاثة: برحم ونکاح صحیح… وولاء (الدر المختار مع رد المحتار، کتاب الفرائض، ۱۰: ۴۹۷، ۴۹۸، ط: مکتبة زکریا دیوبند) ۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :169698
تاریخ اجراء :Apr 18, 2019

PDF ڈاؤن لوڈ