1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. عبادات
  3. صلاة (نماز)

سفر کے دوران نماز قصر پڑھی جاتی ہے اس کی نیت کیسے کرتے ہیں؟ اوراگر سفر کے دوران کسی کی نماز چھوٹ جائے اور وہ شخص اپنے گھر واپس آجائے ایسی حالت میں قضا نماز قصر کی نیت کرے گا یا پوری نماز پڑھنی ہوگی؟

سوال

سفر کے دوران نماز قصر پڑھی جاتی ہے اس کی نیت کیسے کرتے ہیں؟ اوراگر سفر کے دوران کسی کی نماز چھوٹ جائے اور وہ شخص اپنے گھر واپس آجائے ایسی حالت میں قضا نماز قصر کی نیت کرے گا یا پوری نماز پڑھنی ہوگی؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
فتوی: 366=335/ب
 
اس طرح نیت کریں کہ میں نماز پڑھتا ہوں ظہر کی قصر دو رکعت فرض اللہ کے واسطے، سفر میں چھوٹی ہوئی نماز گھر آکر قضا کرے گا، تو اس میں قصر کرے گا۔ اس میں اسی طرح نیت کرے گا جو اوپر تحریر کی گئی۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :11720
تاریخ اجراء :Apr 7, 2009

PDF ڈاؤن لوڈ