1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاشرت
  3. نکاح

ہمارے والد صاحب ہمارے بھائی کا نکاح نہیں کر رہے ہیں

سوال

(۱) اگر ہمارے والد صاحب ہمارے بھائی کا نکاح نہیں کر رہے ہیں اور اگر کو ئی بھی رشتہ آتا ہے تو کسی نہ کسی بہانے سے اس رشتہ کو کاٹ دیتے ہیں تو ایسی حالت میں بھائی کا نکاح کس طرح سے کیا جائے؟
(۲) دوسرا سوال یہ ہے کہ ہمارے والد صاحب پراپرٹی کو تقسیم نہیں کررہے ہیں، فیملی کی کنڈیشن اس طرح سے کردی ہے کہ کوئی بھی بھائی بہن آپس میں محبت (پیار اور دیکھ بھال) نہیں ہے او رکوئی بھی گھر نہیں آنا چاہتا، وہ کسی بھی حال میں پراپرٹی کی تقسیم نہیں کرنا چاہتے، ایسی حالت میں شریعت کا کیا قانون ہے؟ اور کیا ہم سب بھائی بہن کا کوئی حق ہے باپ کی پراپرٹی میں؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa ID: 121-068/B=2/1438
(۱) خاندان میں کسی بڑے آدمی کو درمیان میں ڈال کر انہیں سمجھائیں۔
(۲) ان کی وفات کے بعد تقسیم کر لیجئے گا۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :145997
تاریخ اجراء :Nov 17, 2016

PDF ڈاؤن لوڈ