1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. عقائد و ایمانیات
  3. اسلامی عقائد

حضرت ابوطالب كی سزا كے بارے میں سوال

سوال

ابو طالب آپ صلی کے چچا کے بارے میں سوال ہے کہ ان کو جہنم میں آگ کا جوتا پہنایا جا ئے گا یعنی سب سے ہلکا عذاب ہوگا ابو طالب کو اور ایک مومن بدکار کو اوندھے منھ جہنم میں ڈال دیا جا ئے گا۔ ایسا کیوں ہے ؟جب کہ ایک مومن کے پاس ایمان بھی ہے اس کے باوجود اگر بدکار ریا کار ہے تو پورا جہنم میں ڈالدیا جائیگا اور ابو طالب کو کیوں صرف آگ کی جوتی ڈالی جائے گی اورکیوں سب سے ہلکا عذاب دیا جائیگا ایمان بھی نہیں تھا ابو طالب کے پاس؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa : 918-828/M=09/1440
اللہ تعالیٰ قادر مطلق اور مالک الملک ہے، وہ جس کو چاہے جیسا عذاب دے اُسے کلی اختیار ہے مالک کو اپنی ملکیت میں ہر تصرف کا حق ہوتا ہے، کسی کو اعتراض کرنے کا کوئی حق نہیں۔ ایک موٴمن بدکار کو اوندھے منہ جہنم میں ڈالنے کی صورت و کیفیت کیا ہوگی؟ اس کی تفصیل بھی معلوم نہیں، بہرحال عاصی موٴمن کو جہنم کی سزا دائمی نہیں ہے وہ اپنے ایمان کی وجہ سے ایک نہ ایک دن ضرور جہنم سے نکالا جائے گا۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :170861
تاریخ اجراء :Jun 25, 2019

PDF ڈاؤن لوڈ