1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. عبادات
  3. زکاة و صدقات

جس مدرسے میں طلبہ كے لیے گاؤں سے كھانا آتا ہے كیا وہاں زكاۃ چرم قربانی وغیرہ دے سكتے ہیں؟

سوال

ہمارے یہاں ایک مدرسہ ایسا ہے جس میں باہر کے طلباء رہتے ہیں لیکن ان طلباء اور اساتذہ کا کھانا گاؤں کے لوگ اپنے گھروں سے بھیجتے ہیں کیا ؟ایسے مدرسہ میں اپنی زکوٰة/چرم دینا جائز ہے ؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa:1386-1257/M=12/1439
اگر مذکورہ مدرسے میں مستحق طلباء کو وظیفہ دیا جاتا ہے تو اتنی مقدار میں زکاة وچرم قربانی کی رقم دے سکتے ہیں جس سے ان کی ضرورت پوری ہوجائے اور اگر بالکل بھی مصرف نہیں ہے تو دینا درست نہیں۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :164868
تاریخ اجراء :Sep 11, 2018

PDF ڈاؤن لوڈ