1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. عبادات
  3. ذبیحہ وقربانی

كیا شیعہ کا ذبیحہ درست ہے؟

سوال

ہمارے ہاں دفتر میں شیعہ زیادہ ہیں اور کبھی کبھار کھانے کا اہتمام ہوتا ہے۔ بعض اوقات مرغی کا گوشت آتا ہے جو شعیہ کا ذبح کیا ہوتا ہے ۔1 بعض اوقات پتا نہیں چلتا کہ گوشت شعیہ کا ذبح ہے یا اہلسنت کا اس صورت میں کیا کیا جائے چونکہ دفتر میں گوشت لانے والے شعیہ ہیں 2رہنمائی فرمائیں کہ ذبیحہ سے کیسے بچا جائے چونکہ عموماً ہفتے میں ایک یا دو دفعہ گوشت کسی نہ کسی صورت میں آ تاہے۔ بعض اوقات شعیہ کے ذبیحہ سے بچنا کافی مشکل ہوتا ہوتا ہے۔ کیونکہ دفاتر میں افسر یا دیگر مہمان ہوتے ہیں اس صورتحال میں کیا حکم ہے؟3 شعیہ کے ہوٹل سے بغیر گوشت کے سالن کھا سکتے ہیں یانہیں؟

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم
Fatwa:1203-1052 /D=12/1440
(۱) شیعہ کی معتبر کتابوں میں تحریفِ قرآن، سبِ شیخین رضی اللہ عنہما، اسی طرح حضرت ام الموٴمنین عائشہ رضی اللہ عنہا پر زنا کی تہمت وغیرہ کفریہ عقائد کی صراحت ہے، جو شخص ان عقائد کفریہ کا معتقد ہے اس کا ذبیحہ حرام ہے۔ اور جو شیعہ ان کفریہ عقائد کا قائل نہ ہو تب بھی اس کا ذبیحہ واجب الاجتناب ہے، اور اگر شیعہ اور اہل سنت کے ذبیحہ ہونے میں تردد ہو تو تردد کی صورت میں شیعہ ہی کا ذبیحہ مانا جائے گا۔ لہٰذا اس سے بھی اجتناب کریں۔
(۲) آپ گوشت کھانے سے عذر کردیں، مثلاً یہ کہ میں پرہیزی کھانا سبزی وغیرہ کھاتا ہوں۔
(۳) اگر گوشت کا سالن ہے تو بغیر بوٹی کے صرف سالن کھانے سے بھی احتراز کریں۔ ہاں دوسری چیز مثلاً آلو وغیرہ کا سالن کھاسکتے ہیں۔
واللہ تعالیٰ اعلم
دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :172401
تاریخ اجراء :Aug 8, 2019

PDF ڈاؤن لوڈ