1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. متفرقات
  3. حلال و حرام

رہن ركھی زمین سے فائدہ اٹھانا كیسا ہے؟

سوال

ارض مرہونہ سے انتفاع کا حکم کہا ہے؟ انتفاع کی کوئی جائز صورت ہے یا نہیں؟ اگر ہے تو وہ کیا ہے؟ جزاکم اللہ

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 569-409/SN=06/1441


(۱) ارضِ مرہونہ سے انتفاع شرعاً جائز نہیں ہے، مرہون سے انتفاع درحقیقت ”قرض“ سے انتفاع ہے اور ”قرض“ سے نفع حاصل کرنے کو احادیث میں ”ربو “ یعنی ”سود “ کہا گیا۔ کل قرض جرّ منفعة فہو ربا (مصنف ابن أبی شیبة) ۔ نیز دیکھیں، شامی: ۱۰/۸۳، ط: زکریا)


(۲) اس کی جائز صورت نہیں ہے۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :176551
تاریخ اجراء :Feb 9, 2020

PDF ڈاؤن لوڈ