1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. وراثت ووصیت

ایک بیوی، چار بیٹیوں اور ایک بیٹے کے درمیان وراثت کی تقسیم

سوال

براہ کرم ایک بیوی، چار بیٹیوں اور ایک بیٹے کے درمیان تقسیم وراثت کی وضاحت فرمائیں۔

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 894-653/H=07/1441


بعد اداءِ حقوقِ متقدمہ علی المیراث و صحت تفصیل ورثہ مرحوم کا کل مالِ متروکہ اڑتالیس (48) حصوں پر تقسیم کرکے چھ (6) حصے مرحوم کی بیوی کو، چودہ (14) حصے مرحوم کے بیٹے کو، اور سات سات (7-7) حصے مرحوم کی چاروں بیٹیوں کو ملیں گے۔


التخریج


کل حصے   =             48


-------------------------


بیوی         =             6


بیٹا            =             14


بیٹی           =             7


بیٹی           =             7


بیٹی           =             7


بیٹی           =             7


--------------------------------

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :177492
تاریخ اجراء :Mar 19, 2020

PDF ڈاؤن لوڈ