1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. وراثت ووصیت

ایک بیوی، چار بہن، تین بیٹے ، چھ بیٹیوں كے درمیان تقسیم جائیداد

سوال

ایک بیوی، چار بہن، تین بیٹے ، چھ بیٹیوں كے درمیان تقسیم جائیداد

جواب

Fatwa:17-15/sd=01/42

 صورت مسئولہ میں اگر مرحوم کے والدین وغیرہ میں سے کوئی باحیات نہیں ہے ، تو کل ترکہ چھیانوے حصوں میں تقسیم ہوگا جس میں سے بیوی کو بارہ حصے ، تینوں بیٹوں میں سے ہر ایک کو چودہ چودہ حصے اور چھ بیٹیوں میں سے ہر ایک کو سات سات حصے ملیں گے اور بہنیں محروم ہوں گی ۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :179788
تاریخ اجراء :09-Sep-2020

فتوی پرنٹ