1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. وراثت ووصیت

كیا سوتیلا بیٹا وارث بنے گا ؟

سوال

كیا سوتیلا بیٹا وارث بنے گا ؟

جواب

Fatwa:52-30/SN=2/1442

 یہ بچہ اپنی ماں کے دوسرے شوہر کا وارث نہ بنے گا؛ کیونکہ یہ اس کا حقیقی بیٹا نہیں ہے جب کہ وارث صرف حقیقی بیٹا ہوتا ہے ۔(2) اس بچے کی ولدیت میں اس کی ماں کے دوسرے شوہر کا نام لکھنا شرعا جائز نہیں ہے ۔ سخت گناہ ہے ۔

((یُوصِیکُمُ اللَّہُ فِی أَوْلَادِکُمْ لِلذَّکَرِ مِثْلُ حَظِّ الْأُنْثَیَیْنِ)) (النساء:11) (( وَمَا جَعَلَ أَدْعِیَائَکُمْ أَبْنَائَکُمْ ذَلِکُمْ قَوْلُکُمْ بِأَفْوَاہِکُمْ وَاللَّہُ یَقُولُ الْحَقَّ وَہُوَ یَہْدِی السَّبِیلَ (4) ادْعُوہُمْ لِآبَائِہِمْ ہُوَ أَقْسَطُ عِنْدَ اللَّہِ)) (الأحزاب: 4، 5)

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :600037
تاریخ اجراء :26-Sep-2020

فتوی پرنٹ