1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاشرت
  3. نکاح

كسی نے شہوت کے ساتھ سوئی ہوئی بہن کو اپنے جسم سے لپیٹ لیا ‏، كیا اس سے نكاح پر كوئی اثر پڑے گا؟

سوال

ایک نکاح شدہ مرد نے شہوت کے تحت اپنی سوئی ہوئی بہن کو اپنے جسم سے لپیٹ لیا۔ اسی حالت میں مرد کی منی خارج ہو گئی۔ بہن کو پتہ نہیں چلا۔ کیا مرد کا نکاح ختم ہو گیا؟ مرد کی توبہ کے لئیے کیا حکم ہے؟ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں۔

جواب

بسم الله الرحمن الرحيم


Fatwa : 773-624/D=09/1441


مذکورہ عمل سخت بے شرمی پر مبنی حرام عمل ہے اس سے توبہ استغفار کرنا لازم ہے اور آئندہ ہرگز اس طرح عمل کے قریب بھی نہ جائیں، لیکن اس عمل کی وجہ سے مرد کا اپنی بیوی سے نکاح ختم نہیں ہوا بلکہ وہ بدستور قائم اور باقی ہے۔

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :178372
تاریخ اجراء :May 14, 2020

PDF ڈاؤن لوڈ