1. دار الافتاء دار العلوم دیوبند
  2. معاملات
  3. دیگر معاملات

باپ مرجائے تو کمسن پوتے کا خرچ کون برداشت کرے گا؟

سوال

باپ مرجائے تو کمسن پوتے کا خرچ کون برداشت کرے گا؟

جواب

Fatwa:157-172/sd=3/1442

 صورت مسئولہ میں اگر یتیم بچے کی ماں اور دادا زندہ ہیں تو بچہ کا نفقہ ان دونوں پر بقدر حصہ میراث عائد ہوگا، یعنی ایک تہائی خرچہ ماں کے ذمہ اور دو تہائی دادا کے ذمہ ہوگا۔

قال ابن نجیم: فی الخانیة: صغیر مات أبوہ، ولہ أم وجد (أب الأب) کانت النفقة علیہما أثلاثا : الثلث علی الأم والثلثان علی جد الأب، قال ابن عابدین فی المنحة : قولہ : علی جد الأب: صوابہ علی الجد الخ ۔(البحر الرائق مع منحة الخالق: ۴/۳۶۱، باب النفقة، دار الکتب العلمیة، بیروت )

واللہ تعالیٰ اعلم

دارالافتاء،
دارالعلوم دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم دیوبند
فتوی نمبر :600811
تاریخ اجراء :17-Nov-2020

فتوی پرنٹ