1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. اعتکاف

رمضان کے اخیر عشرہ میں اعتکاف کرنے والا شخص کیا جمعہ کے دن غسل مسنون کر سکتا ہے کیونکہ میں نے کہیں پڑھا ہے کہ اعتکاف مسنون میں غسل مسنون سے اعتکاف ٹوٹ جاتا ہے مدلل جواب مطلوب ہے

سوال

رمضان کے اخیر عشرہ میں اعتکاف کرنے والا شخص کیا
جمعہ کے دن غسل مسنون کر سکتا ہے
کیونکہ میں نے کہیں پڑھا ہے کہ اعتکاف مسنون میں غسل مسنون سے اعتکاف ٹوٹ جاتا ہے
مدلل جواب مطلوب ہے

جواب

Ref. No. 40/1058

الجواب وباللہ التوفیق 

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔ غسل مسنون کے لئے بھی نکلنے کی  اجازت نہیں ہے ، اگر غسل مسنون کے لئے مسجد سے نکل کرباہر جائے گا تو اعتکاف فاسد ہوجائے گا، البتہ اگر قضائے حاجت  کے لئے جائے اور غسل بھی جلدی سے کرکے آجائے تو اس کی گنجائش ہے۔ اس میں غسل بھی ہوجائے گا اور اعتکاف بھی باقی  رہے گا۔ (حرم علیہ ای علی المعتکف الخروج الا لحاجۃ الانسان طبیعیۃ کبول و غائط وغسل لو احتلم ولایمکنہ الاغتسال فی المسجد (الدر مع الرد 30/435) ولو خرج من المسجد ساعۃ بغیرعذر فسد اعتکافہ عند ابی حنیفۃ (ھدایہ 1/294))۔

واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :1677
تاریخ اجراء :Jun 11, 2019

فتوی پرنٹ