1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. نماز / جمعہ و عیدین

کیا فرماتے ہیں علماء دین مسئلہ ذیل کے بارے میں کہ اگر مسافر امام نے جان کر یا انجانے میں عصر یا عشاء کی پوری چار رکعات مکمل پڑھا دی تو امام اور مقتدی دونوں کی نماز درست ہو جائیگی یا پھر اعادہ کی ضرورت پڑیگی

سوال

کیا فرماتے ہیں علماء دین مسئلہ ذیل کے بارے میں
کہ اگر مسافر امام نے جان کر یا انجانے میں عصر یا عشاء کی پوری چار رکعات مکمل پڑھا دی تو امام اور مقتدی دونوں کی نماز درست ہو جائیگی یا پھر اعادہ کی ضرورت پڑیگی

جواب

Ref. No. 39 / 979

الجواب وباللہ التوفیق                                                                                                                                                        

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔ احناف کے نزدیک قصر واجب ہے۔ صورت مسؤولہ میں مسافر نے اگر دورکعت پر قعدہ کیا تھا توامام کی نماز  کراہت کےساتھ ہوجائے گی، مگر اعادہ کرلینا بہتر ہے، البتہ  مقتدیوں کی نماز درست نہیں ہوئی، ان پر تمام رکعتوں  میں بطور فرض   اقتداء کرنا لازم   تھا جبکہ امام پر دوہی رکعتیں  فرض تھیں ۔لہذا مقتدی حضرات اپنی نمازیں ضرورلوٹالیں۔  کذا فی الشامی

واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :1160
تاریخ اجراء :Mar 18, 2018,

PDF ڈاؤن لوڈ