1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. طلاق و تفریق

مفتی صاحب السلام علیکم شوہر بیوی میں آپس میں اختلاف ہوااور ان دونوں نے بغیر طلاق دیئے دوسری جگہ شادی کر لی ۔۔۔اب آٹھ سال کے وقفہ کے بعد وہ دونوں پھر ایک ساتھ رہنا چاہتے ہیں ۔اب انکو دوبارہ نکاح کرنا ہوگا یا پہلا نکاح ہی کا

سوال

شوہر بیوی میں آپس میں اختلاف ہوا، اور ان دونوں نے بغیر طلاق دیئے دوسری جگہ شادی کر لی ۔اب آٹھ سال کے وقفہ کے بعد وہ دونوں پھر ایک ساتھ رہنا چاہتے ہیں ۔اب انکو دوبارہ نکاح کرنا ہوگا یا پہلا نکاح ہی کافی ہے یا جو بھی صورت ہو ۔ جواب جلد از جلد عنایت فرمائیں نوازش ہو گی!

جواب

Ref. No. 39/1053

الجواب وباللہ التوفیق 

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔  شوہر اول کے طلاق دئے بغیربیوی کا  دوسری جگہ نکاح  درست نہیں ہوا، دوسرے شوہر کے ساتھ حرام کاری ہوئی، عورت پر توبہ  لازم ہے۔ مرد کا دوسری جگہ نکاح کرنا درست ہوا۔ بہر حال ان دونوں کا نکاح اب بھی باقی ہے۔ عورت  عدت گزارنے کے بعد پہلے شوہر کے پاس  بغیر تجدید نکاح کے واپس آسکتی ہے۔  البتہ اگر تجدید نکاح کرلیں تو بہتر ہے۔ 

واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :1250
تاریخ اجراء :May 31, 2018,

فتوی پرنٹ