1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. روزہ و رمضان

لام علیکم ورحمت اللہ وبرکاتہ کیافرماتےہیں مفتیان کرام تراویح پراجرت لینےکےبارےمیں جبکہ دارالعلوم سےفتویٰ ہیکہ ناجائزہے اور جامعہ رحمانی مونگیر اور امارت شرعیہ پٹنہ وہاں کےمفتیان کرام جائز کہتےہیں جبکہ ایک رسالہ ہے جوحضرت م

سوال

Ref. No. 842

کیافرماتےہیں مفتیان کرام تراویح پراجرت لینےکےبارےمیں جبکہ دارالعلوم سےفتویٰ ہیکہ ناجائزہے اور جامعہ رحمانی مونگیر اور امارت شرعیہ پٹنہ وہاں کےمفتیان کرام جائز کہتےہیں جبکہ ایک رسالہ ہے جوحضرت مولانامحمد ولی رحمانی صاحب دامت برکاتہم کےمدرسہ جامعہ رحمانی میں موجود ہےوہاں جائز کافتوی ہے اور اس پر چالیس بڑےبڑےمفتیان کرام کادستخط ہےجوجائز کہتےہیں اس میں سابق مفتی اعظم دارالعلوم دیوبندمفتی ظفیرالدین صاحب رحمت اللہ علیہ کابھی دستخط اگروہ لوگ جائزکہتےہیں توان   علماء کرام کی باتوں پرعمل کیاجاسکتاہےیانہیں جیساکہ آج کل کےمفتیان کرام بھی اس میں ملوث ہیں

جواب

Ref. No. 836 Alif

الجواب وباللہ التوفیق                                                                                         

بسم اللہ الرحمن الرحیم-:  تراویح کی اجرت متعین کرکے لین دین کرنا درست نہیں ہے، تاہم اگر مصلی حضرات اپنے طور پر کچھ دینا چاہیں تو دے سکتے ہیں  اور امام صاحب کے لئے اس کا لینا بھی درست ہوگا، یہی احوط ہے۔   واللہ تعالی اعلم  بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :517
تاریخ اجراء :Nov 28, 2015,

PDF ڈاؤن لوڈ