1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. نکاح و شادی

اگر داماد ساس کو چھولے غلط نیت کے ساتھ یا سسر بہو کو غلط نیت سے چھولےتو کیا حکم ہے؟ با حوالہ بتائیں ؟

سوال

Ref. No. 1176

 اگر داماد ساس کو چھولے غلط نیت کے ساتھ یا سسر بہو کو غلط نیت سے چھولےتو کیا حکم ہے؟ با حوالہ بتائیں ؟ سعد شاہد

جواب

Ref. No. 1242 Alif

الجواب وباللہ التوفیق

بسم اللہ الرحمن الرحیم۔  اگر داماد  اپنی ساس کو غلط نیت سے چھولے تو اس کی بیوی اس پر  ہمیشہ کے لئےحرام ہوجائے گی۔ اسی طرح اگر سسر نے اپنی بہو کو غلط نیت سے چھودیا تو بہو اس کے بیٹے کے لئے حرام ہوجائے گی۔ ومن مستہ امرءة بشھوة حرمت علیہ امھا وابنتھا، ہدایہ ج۲ ص۳۰۹۔ یحرم کل من الزانی والمزنیة علی اصل الآخروفرعہ۔ شامی۔  واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند

 


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :368
تاریخ اجراء :Jul 5, 2015,

فتوی پرنٹ