1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. ربوٰ وسود/انشورنس

كميٹی 10 مہینے کی هے۔10/ آدمی ہیں۔ ہر آدمی روزانہ 200 روپئے دیتا ہے۔ہر آدمی کے مہینے کے6000 ہوتے ہیں۔ ٹوٹل 60000 بنتے ہیں۔ پھر تمام ممبران کے نام پرچیوں پر لکھ کر قرعہ اندازی کرتے ہیں اور نام نکالا جاتا ہے، جس کے نا

سوال

السلام علیکم  ورحمة الله وبركاته  : كميٹی 10 مہینے کی  هے۔10/ آدمی ہیں۔ ہر آدمی روزانہ  200 روپئے دیتا ہے۔ہر آدمی  کے مہینے کے6000 ہوتے ہیں۔  ٹوٹل 60000 بنتے ہیں۔ پھر  تمام ممبران کے نام پرچیوں پر لکھ کر  قرعہ اندازی کرتے ہیں  اور نام نکالا جاتا ہے، جس کے نام کی پرچی نکلتی ہے اس کو 60000 روپئے  دیدئے جاتے ہیں، جس آدمی کو  پیسہ ملا وو آدمی 10 مہینے تک  روزانہ 200  روپئے دیتا رہے  گا۔  اب یہ جائز ہے یا نہیں ؟

جواب

 

سوال مذکور کا جواب دیا جاچکا ہے، فتوی نمبر 886 دیکھئے۔

Ref. No. 886 Alif

الجواب وباللہ التوفیق

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔کمیٹی میں کسی کو کم یا زیادہ رقم نہ ملے بلکہ صرف یہ مقصود ہو کہ ہر ایک کو اکٹھی رقم مل جائے، تو اس میں کوئی حرج نہیں ہے۔

واللہ اعلم بالصواب

 

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :187
تاریخ اجراء :Jan 6, 2015,

فتوی پرنٹ