1. دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
  2. روزہ و رمضان

ایک عالم صاحب نے کہا کہ خون نکل جانے سے روزہ مکروہ ہوجاتا ہے۔ کیا یہ صحیح ہے؟

سوال

Ref. No. 1012

ایک عالم صاحب نے کہا کہ خون نکل جانے سے روزہ مکروہ ہوجاتا ہے۔ کیا یہ صحیح ہے؟

جواب

Ref. No. 997 Alif

الجواب وباللہ التوفیق

بسم اللہ الرحمن الرحیم۔ مطلقاً خون نکلنے سے روزہ  نہیں  ٹوٹ جاتا بلکہ اتنا خون نکل جائے کہ جس سے کمزوری پیداہوجائے تو روزہ مکروہ ہوجاتا ہے۔ یہ اس صورت میں ہے جبکہ آدمی اپنی مرضی سے خون نکلوائے۔  لیکن اگر کسی چوٹ وغیرہ سے خود ہی نکل جائے تو کوئی کراہت نہیں۔ وکرہ للصائم۔۔۔ وما ظن انہ یضعفہ کالفصد والحجامۃ (نورالایضاح ص 147)

 واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند


ماخذ :دار الافتاء دار العلوم (وقف) دیوبند
فتوی نمبر :65
تاریخ اجراء :Jul 22, 2014,

PDF ڈاؤن لوڈ