1. دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی
  2. فتاوی

مقتول کی دیت ترکہ میں شامل ہوکر تمام ورثہ میں تقسیم ہوگی

سوال

٦۔اس حاصل ہونے والی دیت کے مقتول کے ورثاء میں سے کون کون سے وارث کتنی کتنی مقدار کے حقدار ٹھہریں گے؟
ازراہ کرم مکمل تفصیل کے ساتھ جلد جواب مرحمت فرماکر مشکوروممنون فرمائیں۔

جواب

٦۔مقتول کی دیت اس کے ترکہ میں شامل ہوگی،اور تمام شرعی ورثہ اپنے حصے کی بقدر اس کے مستحق ہوں گے،ہر وارث کے حصہ کی تفصیل کل ورثہ کی تعداد اور ترکہ کی مقدار بتانے پر بتائی جاسکتی ہے۔
واللہ سبحانہ وتعالی اعلم بالصواب
حوالہ جات
-
مجيب
شفاقت زرین صاحب
مفتیان
مفتی فیصل احمد صاحب
مفتی سیّد عابد شاہ صاحب


ماخذ :دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی
فتوی نمبر :56284-E
تاریخ اجراء :2016-11-13

PDF ڈاؤن لوڈ